234

پاکپتن: بابا فرید یونیورسٹی کا قیام وقت کی اہم ضرور ت ہے. مستنصر کامران، شہزاد احمد

پاکپتن(حیدر علی شہزاد سے )بابا فرید یونیورسٹی کا قیام وقت کی اہم ضرور ت ہے پاکپتن کے طلباء کو اعلیٰ تعلیم کے حصول سے مزید محروم نہیں رکھا جا سکتا ان خیالات کا اظہار نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن کے مرکزی راہنما شہزاداحمد اور مستنصر کامران نے پریس کانفریس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن کے زیر اہتمام 2015 سے تحریک کا آغاز کیا تھا جو مسلسل کامیابی سے جاری ہے ان کا کہنا تھا کہ بابا فرید یونیورسٹی کا قیام اب وقت کی اہم ضرورت ہے پاکپتن کے طلباء لاہور ، ساہیوال اور اسلام آباد کے تعلیمی اداروں کی بھاری فیسیں دینے سے قاصر ہیں لہذا پاکپتن کو سرکاری یونیورسٹی دی جائے ان کا کہنا تھا کہ بابا فرید یونیورسٹی کا وعدہ مقامی سیاسی راہنماؤں نے بھی کیا تھا لیکن یونیورسٹی کا وعدہ وفا نہیں ہوا ۔ ان کا کہنا تھا کہ بابا فرید سے محکمہ اوقاف سالانہ کروڑوں روپے آمدنی وصول کرتا ہے لیکن پاکپتن کی عوام اس آمدنی سے پاکپتن کی عوام کو کوئی فوائد حاصل نہیں ،انہوں نے اس موقع پر کہا کہ نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن یونیورسٹی تحریک ایک بار پھر تیز کررہی ہے ور اس سلسلے میں نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن دستخطی مہم کا آغاز کر رہی ہے اس مہم کے نتیجے میں ایک لاکھ افرادسے دستخط کروا کر حکومت سے مطالبہ کیا جائے گاپاکپتن کے شہریوں کو جلد از جلد بابا فرید یونیورسٹی دی جائے۔ اس موقع پر نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن آرگنائزر عاطف کھوکھر ، رانا فرید ، فروز خان ، ملک کامران دیگر عہدادران بھی موجود تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں