242

ساہوال: سائبرکرائم. بے نظیرانکم سپورٹ کی آڑمیں سادہ لوح خواتین کے ڈیٹاپر ہیکروں کا حملہ.

ساہیوال(خصوصی رپورٹ) بے نظیرانکم سپورٹ کی آڑمیں سادہ لوح خواتین کے ڈیٹاپر ہیکروں کا حملہ،سائبرکرائم کے ماہرنوجوانوں نے مساجد میں اعلان کے ذریعے عورتوں کو جمع کیا،اصل شناختی کارڈاوربائیومیٹرک کے ذریعے ڈیٹاہتھیالیا،غیر ملکی کمپنی کی4ہزارسمیں800خواتین کے نام پر ایکٹوکرلیں،جرائم پیشہ افراد کومہنگے داموں فروخت کی جانے لگیں،گرے ٹریفکنگ اوربنک اکاؤنٹ سے رقمیں نکلوانے کیلئے استعمال کی جارہی ہیں۔سائبرکرائم کی دنیا میں نوجوانوں نے نت نئی راہیں نکالنا شروع کررکھی ہیں۔گزشتہ دنوں تین نوجوانوں نے تھانہ یوسف والا کے علاوہ 53/5-Lکی تین مختلف مساجد میں اعلان کروایاکہ مالی امدادکی خواہشمند خواتین اپنے اصل شناختی کارڈ کے ساتھ ایک جگہ پر اکھٹی ہوجائیں۔گاؤں کی 800سے زائد سادہ لوح خواتین ان کے جھانسے میں آگئیں جن کے شناختی کارڈ کے کوائف اوران کے فنگرپرنٹ بائیو میٹرک تصدیق کے بعد موبائل سم جاری کرنے کیلئے استعمال کئے گئے۔ان خواتین کے نام پر4000سے زائد سمیں جاری کرلی گئیں جنہیں بعدازاں مبینہ طور پر سائبر کرائم کیلئے استعمال کیاجارہاہے ۔گزشتہ دنوں مشن چوک ہائی سٹریٹ کے علاقہ میں واقع ایک بنک کی اے ٹی ایم کو ہیک کرتے ہوئے ایک ملین کے لگ بھگ رقومات نکلوائی گئیں۔جعلسازی کی اس بڑی واردات کاانکشاف اس وقت ہواجب ایک متاثرہ خاتون اپنے خاوندکے ہمراہ موبائل سم جاری کروانے ایک موبائل کمپنی کے دفترپہنچی تواسے بتایاگیاکہ خاتون کے نام پر نوسمیں جاری ہوچکی ہیں۔ذرائع کے مطابق جعلسازی سے جاری ہونے والی ان سموں کی تعداد4ہزارسے زائد جن کی نصف سے زائد تعدادایک غیر ملکی موبائل سم کمپنی بتائی جاتی ہے۔پولیس تھانہ یوسف والا نے دوملزمان کو گرفتارکرتے ہوئے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں