245

پاکپتن: حکومت کی جانب سے آلو کا امدادی ریٹ مقرر نہ ہونے پر کسان سڑکوں پر نکل آئے.

پاکپتن(بیورورپورٹ)حکومت کی جانب سے آلو کا امدادی ریٹ مقرر نہ ہونے پر کسان سڑکوں پر نکل آئے،سینکڑوں کسانوں نے واپڈا آفس روڈ پر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے آلو کی فصل کو آگ لگا دی حکومت کے خلاف سخت نعرہ بازی.

پاکستان کسان اتحاد کے تحصیل جنرل سیکرٹری میاں عبدالرحمن وٹوصوبائی صدر پنجاب چوہدری رضوان اقبال ضلعی صدر چوہدری صابر نیاز کمبوہ ضلعی سیکرٹری اطلاعات چوہدری محمد اشرف سمیت سینکڑوں کسانوں نے واپڈا آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے آلو کی فصل کو زمین پر رکھ کرآگ لگا دی کسانوں نے اپنے مطالبات کے حق میں شدید احتجاج کیا نعرے بازی بھی کی احتجاج کے دوران واپڈا آفس کی مین سڑک ہر قسم کی ٹریفک کے بند کردی مظاہرین سے خطاب کے دوران پاکستان کسان اتحاد کے تحصیل جنرل سیکرٹری میاں عبدالرحمن وٹونے کہا کہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کے باعث ہر سال کسانوں کو آلو کی فصل میں فی ایکڑ 70 سے 80 ہزار خسارے کا سامنا کرنا پڑتا ہے انہوں نے کہا کہ حکومت آلو کی ایکسپورٹ کو بہتر بنائے اگر رواں سال کسانوں کو آلو کی فصل کے مناسب ریٹ نہ ملے تو پاکستان کسان اتحاد آلو کے ٹرک لے کر پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے احتجاج کریں گے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں