259

ساہیوال. اتائی دائی ڈاکٹربن گئی،ڈلیوری کیس میں غلط آپریشن کرکے بچی کی جان لے لی.

ساہیوال(خصوصی رپورٹ) اتائی دائی ڈاکٹربن گئی،ڈلیوری کیس میں غلط آپریشن کرکے بچی کی جان لے لی،محکمہ صحت نے سازوسامان زچگی وادویات برآمد کرکے کلینک سیل کردیا۔نواحی گاؤں 95/6-Rمیں اتائی دائیہ انیس کوثرعرف انیس اختراورساتھی خالدہ نے خود کو ایم بی بی ایس ڈاکٹر وگائناکالوجسٹ ظاہرکرکے کلینک بنارکھاتھا جہاں انہوں نے غلط آپریشن کرتے ہوئے شوکت علی کی معصوم بچی کو دنیا میں آنے سے قبل ہی موت کے آغوش میں پہنچادیا۔شالیمارٹاؤن کارہائشی شوکت علی اپنی بیوی غزالہ کو زچگی کیلئے ڈاکٹر انیس اختراورڈاکٹر خالدہ کے پاس لیکر گیا۔انیس اختر نے اپنے گھر میں کلینک بناکرایک کمرے میں آپریشن تھیٹربنارکھاہے جہاں ایلوپیتھک ادویات اورآلات آپریشن سے خواتین کا چھوٹابڑآپریشن کرکے سادہ لوح خواتین کو دونوں ہاتھوں سے لوٹاجارہاتھا۔شوکت علی نے بتایا کہ الٹراساؤنڈ رپورٹ میں بچی زندہ وتندرست تھی لیکن دائی پہلے نارمل ڈلیوری کو آپریشن میں بدلااورپھر غلط آپریشن کرتے ہوئے بچی کی جان لے لی ۔ذرائع نے بتایاکہ انیس اخترنے دوران ڈلیوری آپریشن کرتے ہوئے بچی کے نازک اعضاء کو بھی تیز دھارآلہ سے نقصان پہنچایاجس سے بچی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی۔اطلاع پر ڈی ایچ او ڈاکٹر اظہرنقوی ‘ڈپٹی ڈی ایچ اوڈاکٹر سعدبن سعید اپنی ٹیم اورپولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے جنہوں نے کلینک سے انگریزی ادویات،زچگی کاسازوسامان برآمد کرلیا۔محکمہ صحت کے مطابق ایلوپیتھک کلینک اورزچہ بچہ مرکزغیر قانونی طو ر پرچلایاجارہاتھاجس کی مالکہ دائیہ انیس کوثرعرف انیس اختردخترمحمد شریف کوئی تصدیق شدہ ،سند ،اجازت نامہ اوراختیارنہیں رکھتی اورنہ ہی کلینک چلانے کی مجاز ہے جبکہ انیس کوثرعرف انیس اخترایک جعلی اتائی ہے ۔صحت ٹیم نے کلینک کو سیل کرکے کارروائی شروع کردی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں