262

سکولوں میں طالبعلموں سے صفائی ومزدوری کروانا معمول بن چکا ہے

پاکپتن(بیورورپورٹ)گورنمنٹ ماڈل گرلز پرائمری سکول 58ڈی کی انتظامیہ نے طالبات کے ہاتھوں میں کسی اورتگاری پکڑا کر مٹی اٹھانے پر لگا دیا سکولوں میں طالبعلموں سے صفائی ومزدوری کروانا معمول بن چکا ہے انتظامیہ خاموش تماشائی تفصیلات کے مطابق پاکپتن کے گورنمنٹ ماڈل گرلز پرائمری سکول 58ڈی میں قوم کی بیٹیاں ہاتھوں میں قلم اور کتاب تھامے پڑھنے کے لئے گئیں جن سے سکول انتظامیہ نے ان سے کتابیں لیکر معصوم طالبات کے ہاتھوں میں کسی اور تگاری پکڑا کر سکول کے مین گیٹ کے باہر سے مٹی اٹھا کرکے سکول میں بھرتی ڈالنے پر لگا دیاہے بچیاں گھر سے تو تعلیم حاصل کرنے سکول آئیں تھیں مگر سکول کی انتظامیہ نے مزدوروں کے فنڈز کو بچانے کی خاطر معصوم طالبات کو ہی مزدوری پر لگادیاہے بچیوں کی مزدوری کرنے کی ویڈیو میڈیا کو موصول ہوگئی واضح رہے پاکپتن کے تعلیمی اداروں سے طالبعلموں سے صفائی کروانا،کوڑا پھینکوانا اب روز مرہ کا معمول بن کر رہ گیا جس پر انتظامیہ خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے۔شہریوں نے سرکاری سکولزمیں محکمہ ایجوکیشن ذمہ داروں کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیاہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں