210

نمونیہ عام نہیں،جان لیوا بیماری ہے: ڈاکٹر یا سمین راشد صوبائی وزیر صحت

لا ہور(ڈاکٹر رووف سعیدی سے) وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ نمونیہ عام نہیں بلکہ جان لیوا بیماری ہے جس سے دنیا بھر میں ہر سال ہزاروں بچے موت کا شکارہوجاتے ہیں۔ 12نومبر کو نمونیہ سے بچاؤ کے عالمی دن پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ اس خطرناک بیماری کی زیادہ تر وجہ والدین میں آگاہی نہ ہونا ہے۔ ماں اور بچے میں غذائی قلت اور قوت مدافعت میں کمی زچہ و بچہ میں مختلف بیماریوں کا باعث بنتی ہیں اور انہی وجوہات کی بدولت بچوں کی بڑی تعداد پیدائش کے فوراً بعد جاں بحق ہو جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں12نومبر کو نمونیہ سے بچاؤ کاعالمی دن منایا جاتا ہے ہمیں اس دن اپنے بچوں کو اس بیماری سے بچاؤ کیلئے عملی اقدامات کرنے کا عزم کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ موسم سرما میں چھوٹے بچوں کے حوالے سے والدین کی لاپرواہی بچوں کو نمونیہ سمیت مختلف بیماریوں کا شکار کر سکتی ہے۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ سردیوں میں بچوں میں نمونیہ کے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔ تیز بخار، کھانسی، سانس لینے میں دشورای، پسلی کا چلنا اور سانس لیتے وقت سیٹی کی آواز آنا نمونیہ کی ممکنہ علامات ہیں۔ لہذا بچوں کو سردی سے بچاؤ کیلئے گرم کپڑے، ٹوپی اور دستانے پہنائیں اور بچوں کو نمونیہ سے بچاؤکی ویکسین لازمی لگوائیں۔ یہ ویکسین معمول کے حفاظتی ٹیکہ جات میں شامل ہے۔ پنجاب میں پولیو مہم کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیر صحت نے بتایا کہ آج سے پنجاب کے12 حساس اضلاع میں پولیومہم شروع کی جارہی ہے۔ جس کے تحت18ہزار ٹیمیں 70 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ مہم لاہور، راولپنڈی اور ڈیرہ غازی خان میں پولیو وائرس کی موجودگی کے سبب شروع کی جا رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں