254

دنیا میں ہر چھ سیکنڈ میں ایک ہلاکت کا سبب تمباکو نوشی ہے . ڈاکٹر شاہد چشتی

پاکپتن(وقار فرید جگنو سے)دنیا میں ہر چھ سیکنڈ میں ایک ہلاکت کا سبب تمباکو نوشی ہے ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی جنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں نے البدر پبلک سکول میں انجمن فلاح مریضاں اور ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن کے زیر انتظام منعقدہ سیمنار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے مذید کہا کہ تمباکونوشی سے سالانہ ساٹھ لاکھ اموات دنیا بھر میں اس عادت کی وجہ سے ہورہی ہیں ۔ جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ اینٹی ٹی بی ایسوسی ایشن حکیم لطف اللہ نے اپنے خطاب میں کہا کہ تمباکونوشی سے چار ہزار سے زائد کیمکل جسم میں داخل ہوتے ہیں جن میں سے 250سے زائد قسم کے کیمیکل ایسے ہیں جو انسانی صحت کے لیے نقصان دہ ہوتے ہیں۔ جبکہ 50سے زائد کیمیکل ایسے ہیں جو مختلف قسم کے کینسر پیدا کرنے کا سبب بنتے ہیں۔ خطرناک بات یہ ہے کہ سالانہ 6لاکھ سے زائد ہلاکتیں سیکنڈ ہینڈ تمباکونوشی یعنی تمباکونوشی کرنے والوں کے آس پاس بیٹھنے سے متاثر ہونے والے افراد بھی اس کے نقصان دہ اثرات سے متاثر ہوتے ہیں۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ تمباکونوشی جو کہ تمام نشوں کی ماں ہے پر جو پبلک پلیس پر اس کو استعمال کرنے پر پابندی کا قانون موجود ہے اس پر فی الفور سختی سے عمل درآمد کروایا جائے۔ اور اس کے لیے ہماری نوجوان نسل، سماجی تنظیمات، اساتذہ،حکومت اور والدین کو آگے آنا ہوگا۔ نوجوان سوشل ایکٹیوسٹ مستنصر کامران اورممتا ز ماہر تعلیم طارق انجم چوہدری نے اس مسئلہ کی روک تھام کے لیے طالب علموں، اساتذہ کرام اور تعلیمی اداروں کے کردار پر روشنی ڈالی۔ پرنسپل البدر سکول اسحاق بدر نے خطاب کرتے ہوئے اپنے حصہ کا کردار ادا کرنے کے عظم کا اظہار کیا اور طلباء کرام کو بھی آگے بڑھ کر خود کو اور اپنے ساتھیوں وعزیزوں کو اس عفریت سے بچاؤ کی تلقین کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں