269

ماحولیاتی آلودگی انسانی زندگی کی بقا کے لئے سب سے بڑا خطرہ بن چکی ہے.پروفیسر محمد طارق

ساہیوال (خصوصی رپورٹ)پرنسپل ساہیوال میڈیکل کالج پروفیسر محمد طارق نے کہا ہے کہ ماحولیاتی آلودگی انسانی زندگی کی بقا کے لئے سب سے بڑا خطرہ بن چکی ہے جس کے تدارک کے لئے حکومت اور معاشرے کو مشترکہ کوششیں کرنی چاہیے۔ماحولیاتی آلودگی سے بننے والی سموگ سے تمام عمر کے لوگ خصوصا بچے مختلف بیماریوں کا شکار ہو رہے ہیں جن سے بچاؤ کے لئے موثر حفاظتی تدابیر اختیار کی جانی چاہیے۔انہو ں نے یہ بات سموگ کے نقصانات بارے آگہی واک سے خطاب کرتے ہوئے کہی جو ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال میں منعقد ہوئی۔واک میں سینئر ڈاکٹروں کے علاوہ نرسوں ،پیرامیڈیکل سٹاف اور مریضوں کے لواحقین نے بھی بڑی تعداد میں شر کت کی ۔پروفیسرڈاکٹر محمد طارق نے کہا کہ سموگ سے ناک ،کان اور گلے کی بیماریاں عام ہو رہی ہے جس سے انسان کا پورا مدافعاتی نظام متاثر ہوتاہے ۔ان بیماریوں سے بچنے کے لئے ضروری ہے کہ غیر ضروری سفر سے گریز کیا جائے اور گھر سے باہر جاتے ہوئے ماسک اور چشمے کا استعمال کیا جائے ۔گھر کی کھڑکیاں اور دروازے بند رکھے جائیں اور دمے یا سانس کے مریض اپنی ادویات ساتھ رکھیں اور بوقت ضرورت ان ہیلراستعمال کریں ۔انہوں نے کہا کہ ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال اور قیوم ہسپتال میں سموگ سے متاثر افراد کے فوری علاج کے مناسب انتظامات کئے گئے ہیں اور ضروری ادویات کی دستیابی بھی یقینی بنائی گئی ہے لہذا فضائی آلودگی کے شکار افراد فوری طور پر قریبی ہسپتا ل سے رجوع کریں تا کہ انہیں بروقت طبی امداد دی جا سکے ۔واک کے شرکاء نے بینرز اور پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے گھے جن پر ماحولیاتی آلودگی روکنے اور عوام میں آگہی پیدا کرنے کے نعرے درج تھے ۔

You can only have direct referrals after 15 days of being a user and having at least 100 clicks credited

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں