207

کسی شخص کو غیر قانونی شکار کی اجازت نہیں دی جا سکتی ۔کمشنر ساہیوال عارف انور بلوچ

ساہیوال (خصوصی رپورٹ) کمشنر ساہیوا ل ڈویژن عارف انور بلوچ نے کہاہے کہ کہ اللہ تعالی نے پرندوں اور جانوروں کی تخلیق زمین کے حسن میں اضافے اور انسانی ضرورتوں کو پورا کرنے کے لئے کی اس لئے ان کی حفاظت اور نشورونما بھی ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے ۔حکومت نے پرندوں کے شکار کے لئے خصوصی پرمٹس اور لائسنس جاری کرنے کی متوازن پالیسی ترتیب دی ہے اس لئے کسی شخص کو غیر قانونی شکار کی اجازت نہیں دی جا سکتی ۔انہوں نے یہ بات اپنے دفتر میں محکمہ وائلڈ لائف کی بریفنگ میں کہی جس میں ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈ لائف ڈاکٹر مصباح سرور نے محکمے کی کارکردگی کے بارے میں بتایا ۔انہو ں نے بتایا کہ محکمہ پرندوں اور جانوروں کے شکار کو ریگولیٹ کرنے کے ساتھ ساتھ غیر قانونی شکار کرنے والوں کے خلاف کارروائی بھی کرتا ہے ۔2017-18میں غیر قانونی شکار کرنے والوں کے خلاف254کیسز رجسٹرڈ کئے گئے جن سے 3لاکھ41ہزار500روپے جرمانہ وصول کیا گیا جبکہ لائسنس جاری کرنے کی مد میں 40لاکھ54ہزار سے زائد آمدنی ہوئی ۔کمشنر عارف انور بلوچ نے محکمے کی کارکردگی کو سراہا اور ہدایت کی کہ غیر قانونی شکار کو روکنے کے لئے پٹرولنگ کا عمل مزید بہتر بنایا جائے۔
جبکہ محکمہ وائلڈ لائف نے غیر قانونی شکار کے خلاف کاروائیاں تیز کرتے ہوئے 3افراد کے خلاف وائلڈ لائف ایکٹ کے تحت چالان کر کے جرمانہ عائد کر دیا ہے اور پورے ضلع میں پٹرولنگ کے عمل کو بھی تیز کر دیا ہے ۔یہ بات ڈسٹرکٹ وائلڈ لائف آفیسر سخی جوئیہ نے ایک پریس ریلیز میں بتائی ۔انہو ں نے کہا کہ 2افراد علی بہاد ر اور طارق محمود سے موقع پر 15ہزار روپے جرمانہ وصول کیا گیا جبکہ ایک شخص سجاد اقبال کے خلاف مزید کاروائی کیلئے چالان عدالت بجھوا دیا گیاہے ۔انہو ں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ غیر قانونی شکار کی روک تھام میں محکمہ وائلڈ لائف کا ساتھ دیں اور غیر قانونی شکاریوں کے خلاف فوری اطلاع0304-4186103پر دیں تا کہ ایسے شکار کو روکا جا سکے ۔محکمہ اطلاع دینے والے افراد کا نام صیغہ راز میں رکھے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں