359

پاکپتن۔ پاکستان تحریک انصاف خواتین ونگ کے زیر انتظام دیہی عورتوں کے حقوق کے عالمی دن کے حوالہ سے تقریب

دین اسلام نے عورت کو جومقام اور مرتبہ دیا ہے اس کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔حکیم لطف اللہ

عورتوں کو خود آگے بڑھ کر اپنے حقوق حاصل کرنے کی جنگ جیتنی ہوگی۔ ڈاکٹر شاہد چشتی

پاکپتن(خصوصی رپورٹ) 15اکتوبر ’’دیہی عورتوں کے حقوق‘‘ کے عالمی دن کے حوالہ سے تقریب زیر صدارت محترمہ رخسانہ منظور ضلعی صدر خواتین ونگ قصر فرید پاکپتن میں منعقد کی گئی۔ تقریب کا اہتمام پاکستان تحریک انصاف خواتین ونگ نے کیا ۔اس موقع پر حکیم لطف اللہ سیکرٹری جنرل پاکستان سوشل ایسوسی ایشن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دین اسلام نے عورت کو جو مقام اور مرتبہ دیا ہے اس کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ وہ عورت جو تین خداندانوں کو سمبھالنے کی ذمہ دارہوتی ہے سب سے پہلے بیٹی کی حیثیت میں اپنے والدین کے گھر کو، پھر بعد از شادی اپنے گھر اور ساتھ میں اپنے سسرال کے پورے خداندان اور گھرانے کی ذمہ داری اٹھاتی ہے۔ عورت جو اپنی پوری زندگی گھر اور خاندانوں کی تعمیر میں لگا دیتی ہے ۔ عورت جو معاشرہ میں ریڑھ کاکردار ادا کرتی ہے جس پر ہمارے معاشرہ کی پوری عمارت کھڑی ہے لیکن معاشرہ اس کو مسلسل نظر انداز کیے جارہا ہے۔ اس کی تعلیم پر توجہ نہیں دی جارہی یہ واضع ہوکہ ایک مرد کی تعلیم محض ایک فرد کی تعلم وتربیت ہے جبکہ ایک عورت کا تعلیم یافتہ ہونا درحقیقت تین خاندانوں اور آئندہ نسلوں کا تعلیم یافتہ ہونا ہے۔ ہم عورتوں کو بچی کھچی خوراک دیتے ہیں جبکہ بیٹوں کو اعلیٰ معیار کی خوراک دیتے ہیں اور اس کی خوراک کی کسی کوپرواہ نہیں کہ جس کے کندھوں پر تین خاندانوں اورآئندہ نسلوں کا بوجھ ہے۔ ہمارے دیہاتوں میں عورت گھر اور کھیت میں اٹھارہ سے بیس گھنٹے کام کرتی ہے اور معاوضہ میں اسے کیا ملتا ہے؟ مزدور عورتوں کا معاوضہ مرد مزدوروں کے نصف سے بھی کم ہے۔ یہ لمحہ فکریہ ہے۔ ڈاکٹر شاہد مرتضیٰ چشتی جنرل سیکرٹری انجمن فلاح مریضاں وچیف ایڈیٹر ماہنامہ بریلینٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عورت اس معاشرہ کا پسا ہو طبقہ ہے جس کو مردوں کے اس معاشرہ میں محض استعمال کیا جاتا ہے اسے اس کے فرائض تو یاد دلائے جاتے ہیں اور ان کو بجالانے پرزور دیا جاتا ہے لیکن اس کے حقوق کی کسی کو پرواہ نہیں ان کومسلسل غصب کیا جارہا ہے۔ عورتوں کو اپنے حقوق سے آگاہ ہونا ہوگا اور پھر عورت کوخود آگے بڑھ کر اپنے حقوق حاصل کرنے کی جنگ جیتنی ہوگی ورنہ پھر رہتی دنیا تک ظلم وجبر کی چکی میں پستے پستے زندگی گزارنی ہوگی۔ ضلعی صدر پی ٹی آئی خواتین ونگ محترمہ رخسانہ منظور نے عورتوں کو اپنے حقوق کے حصول کے لیے اتحاد اور تنظیم کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ آئیں ہم ملک کر اس جدوجہد اور معاشرہ کی تعمیر وترقی میں اپنا کردار ادا کریں۔ اس موقع پر خواتین ورکرز وعہدیداران محترمہ ناہید خان نیازی، ارم کائنات، ایمان فاطمہ، شہناز اختر، فاطمہ بی بی، رانی بی بی، پروین اختر، نسیم اختر، عمار رانی ، چوہدری اویس کمبوہ ضلعی جوائنٹ سیکرٹری پی ٹی آئی، میاں طارق وٹو، ملک فرحت رسول اعوان، چوہدری محمد اعظم، کونسلر رانا علی رضا، مبشر علی خان، ملک عابد، پیر سکندر نیاز چشتی، پیر بابر نیاز چشتی، راہنما رانا مہران اکبر، حاجی افض ، چوہدری عامر ، شاہد علی رحمانی، شہباز چاند بھٹی اور سماجی کارکن پیر عمار انور بودلہ کے علاوہ کثیر تعداد میں خواتین وحضرات نے شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں