640

ناخن اور آپ کی صحت

تحریر: ہومیو پیتھک ڈاکٹر محمد امین

انسانی جسم کے مختلف حصوں کی ساخت اور ان کے رنگوں کا انسانی سوچ، فکر اور صحت سے گہرا تعلق ہوتا ہے ناخن کے مختلف رنگ اور ساخت انسان کی صحت کے متعلق حیرت انگیز معلومات فراہم کرتے ہیں۔آپ کے ناخن آپ کی صحت کے بارے میں بہت کچھ بتا سکتے ہیں کہ آپکو لاحق معمولی سے معمولی بیماری کی بھی نشاندہی کرتے ہیں۔ ناخن ایک علامت کے طور پر آپ کی مجموعی صحت کااظہارکرتے ہیں، جیسے آپ کے ناخن کی وضع قطع سے پتہ چل سکتا ہے آپ جگر ‘دل یا پھیپھڑوں اور دیگر بیماریوں میں مبتلا ہیں۔اس علم کے مطابق آپ کو ناخن کی ساخت دیکھ کر مختلف بیماریوں کا پتہ چل جائے گا جس کی مدد سے آپ اپنی صحت پرضروری توجہ دے سکتے ہیں۔
بہت سی بیماریاں ناخنوں کو متاثر کرتی ہیں ناخن ایک قسم کی پروٹین کیراٹین کا بنا ہوا مواد ہے کیراٹین ناخن‘جلد اوربالوں میں پایا جاتا ہے ۔ ناخن ہر وقت بڑھتا ہے اس کے بڑھنے کی رفتار عمر بڑھنے یا خون کی گردش میں کمی سے کم ہوتی ہے ۔انگلی کے ناخن تین ملی میٹر فی مہینہ کی شرح سے بڑھتے ہیں اور پاؤں کے ناخن ایک ملی میٹر فی مہینہ کی شرح سے بڑھتے ہیں۔
ناخن کی خرابیوں اور بیماریوں کو سمجھنے کے لئے ہمیں پہلے ناخن کے اجزا کو سمجھنا ہو گا۔ ناخن کے 6 حصے ہوتے ہیں۔ ان حصوں میں کسی بھی خرابی کا نتیجہ ناخن کی بیماری کی صورت میں نکلتا ہے۔

ناخن کی جڑ:۔
ناخن کی جڑ کو انتہائی اہم حصہ جانا جاتا ہے جو کہ ناخن کے درمیانی حصہ کا بیشتر حصہ بناتا ہے یہ وہ حصہ ہوتا ہے جو جلد کے نیچے اور ناخن کے پیچھے ہوتا ہے اور انگلی کے اندر کچھ ملی میٹر تک پھیلا ہوتا ہے۔
نیل بیڈ یا ناخن کا درمیانہ حصہ:۔
یہ وہ حصہ ہے جس میں اعصاب ، خون کی نالیاں اور میلانن بنانے والے خلئے موجود ہوتے ہیں یہ ناخن کی جڑ سے ہائیونائی کا ٹم تک پھیلی ہوتی ہیں۔ ناخن جڑ سے بڑھتا ہے اور اسکے درمیانی حصہ تک پھیل جاتا ہے جو اس میں وہ مواد شامل کرتا ہے جس سے ناخن کی موٹائی بڑھ جاتی ہے اگر ناخن کا درمیانی حصہ ہموار نہ ہو گا تو ناخن کٹا پھٹا اور جھری دار ہوسکتا ہے۔
ناخن کا نچلا حصہ یا نیل پلیٹ:۔
نیل پلیٹ ناخن کا وہ حصہ ہوتا ہے جو شفاف کیراٹین بناتا ہے یہ اندرونی خون کی نالیوں کی وجہ سے گلابی نظر آتا ہے۔ نیل پلیٹ کی نچلی سطح میں جھریاں ہوتی ہیں جو کہ ناخن کے درمیانی حصہ سے جڑی ہوتی ہیں۔
کیوٹیکل(ناخنوں کے گرد مومی جلد):۔
اس کو اییونیکائم بھی کہا جاتا ہے یہ انگلی کے ناخن کی جلد اور نیل پلیٹ کے درمیان ہوتی ہے جو ان کو ملا کر پانی کی رکاوٹ بناتے ہیں۔
لونولا(ناخن کی سطح پر نظر آنے والا چاند):۔
یہ نصف چاند کی شکل کا حصہ ہوتا ہے یہ ناخن کے سب سے نچلے حصے میں ہوتا ہے۔
پیر یونیکائم(ناخن کو جوڑنے والا حصہ):۔
یہ پیرونیکا ایج بھی کہلاتا ہے یہ جلد کا وہ حصہ ہوتا ہے جو نیل پلیٹ کے دونوں اطراف میں ہوتا ہے اور گوشت سے جڑے ناخن کا حصہ ہوتا ہے۔
پائیونیکائم(ناخن کے سرے پر موٹی جلد):۔
ناخن کے آزاد کنارے اور جلد کو آپس میں ملاتا ہے ‘ یہ پانی کے اثر انداز ہونے میں رکاوٹ کے طور پر بھی مدد کرتا ہے۔ یہ انگلی کی نوک اونیل پلیٹ کے درمیان حصہ ہوتا ہے۔
پلیٹ یا ناخن کے نچلے حصے کے نقائص:۔
نیل پلیٹ کے نقائص اور تبدیلیاں اس سوزش کی وجہ سے ہو سکتی ہیں جو نیل پلیٹ میں ہوتی ہے ان نقائص میں مندرجہ ذیل شامل ہیں۔
Transverse Ridging of nails
(ناخن کا سخت اور قطع دار ہونے کی علامت ہے۔)
یہ ایک انوبک ڈرماٹائٹس سورائسز ہے جوپیریونیکائم کے انفیکشن کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اس میں نیل پلیٹ یا ناخن کے شفاف حصے پر افقی لکیریں پڑ جاتی ہیں جس سے ناخن جسمانی طور پر بیمار ہو جاتا ہے اور اس کی نشوونما میں رکاوٹ آ جاتی ہے۔ ریناڈس اور ناخن کا زخمی ہونا بیوز لائنز کی وجہ بنتے ہیں جو ناخنوں کی مختلف بیماریوں کا سبب بنتے ہیں۔
Onychorrhexis
(لمبائی کے رخ جن کا سخت ہونا) اس کا سبب لائیکن پلانس، بڑھتی ہوئی عمر‘ سورائسز ناخن پر پھپھوندی کا انفیکشن اور ناخن چبانا ہو سکتا۔
Pitting of Nail
ناخن کا کھردرا پن: اس کا سبب ایلوپیشا آرینا سورائسرینرر سنڈروم اور ایگزیما ہے۔
Onychogryphosis
اونیکو گریمینوسز:۔اس میں ناخن موٹا ہو جاتا ہے اور مینڈے کے سینگ کی طرح مڑ جاتا ہے۔ یہ زخمی ہونے، عمر کے بڑھنے اور سورائسز کی وجہ سے ہوتا ہے۔
Onychauxix
اونیکوکسز:۔ناخن کا موٹا ہونا جس کا سبب سورائسز ناخن کا پھپھوندی لگنا یا زخمی ہونا ہو سکتا ہے۔
Crumbling of nail plate
ناخن کی پلیٹ کا ٹوٹنا:۔ سورائسز ‘ ناخن پر پھپھوندی کا انفیکشن اس کا سبب ہوتا ہے۔
Longitudinal splitting
لمبائی کے رخ ناخن پھٹنا یہ سورائسز ، ناخن کا پھپھوندی لگنا اورلائیکن پلانس کی وجہ سے ہوتا ہے۔
Trachyonychiaٹریکونکیا:۔
ناخن جو کھردرے نظر آتے ہیں۔ ہو سکتا ہے ان کا سب لائیکن پلانس ہو۔
Erosions
نیل پلیٹ کا گھسنا یا کٹاؤ:۔
ان کو کیسز سمجھنا چاہئے جیسے میلانوما سکیموس سیل کارکینوما
Onycholysisاونیکولسز:۔
(نیل پلیٹ کا نیل بیڈ سے علیحدہ ہونا) ناخن کے نچلے حصے کا درمیانی حصے سے علیحدہ ہونا)
اس کی وجہ سورائسز‘ ناخن کی انفیکشن، تھائی رائیڈ کی بیماری، ساکیوذوسز زخم لگنا اور کنبکٹو بائٹ کی خرابیاں ہو سکتی ہیں
ناخن کا رنگ خراب ہونا:
بہت سی بیماریاں نیل پلیٹ کا رنگ بدلنے کا سبب بنتے ہیں۔
زردیا پیلا ناخن :
یہ پھیپھڑوں کی حالت کے سبب ہو سکتے ہیں مثلاً برونکائیٹس اور ٖپھیپھڑوں میں پانی، سانس کی بیماری کینسر اور مدافعت میں کمی کے باعث ہوتا ہے۔ ایچ آئی وی ناخن کی پھوپھوندی کا انفیکشن، خارش اور گنٹھیا کا مرض اس کا تعلق خون کے سفید خلیوں کے ضائع ہونے سے بھی ہوتا ہے خون کے سفید خلیوں کی بیماری جس میں رطوبت کا کسی جگہ پر عرصہ دراز تک رکے رہنا جس کے سبب اس جگہ کا پھول جانا ہے جس میں مبتلا مریض اس کا شکار ہو جاتے ہیں۔ اس کا سبب نکوٹین کے دھبے بھی ہو سکتے ہیں ان لوگوں میں جو کافی عرصے سے تمباکو نوشی کر رہے ہیں۔
سبزناخن:۔
اس کا سبب ناخن کی پھپھوندی اور بکٹیریا سے پیدا ہونے والا انفیکشن ہے۔
بھورے ناخن:۔
یہ نکوٹین کے دھبوں کے باعث ہوتے ہیں ناخنوں کا روغن، پوٹاشیم پرمیگنیٹ اور پوڈوفائلین بھی اس کا باعث ہوتے ہیں جو موہکوں اور مسوں کے علاج میں استعمال ہوتے ہیں۔ اسکی ایک وجہ کیمو تھراپی کے اثرات بھی ہو سکتے ہیں۔
سفید ناخن:۔
اس کی وجہ پروٹین کی سطح کی کمی ہو سکتی ہے گردوں کی خرابی، ہوز لائنز اور مینی کپور کی وجہ سے بھی ناخن سفید ہو سکتے ہیں۔ سفید دھبے ناخنوں پر پھپھوندی کے انفیکشن کی وجہ سے بھی ہو سکتے ہیں۔
ٹیری نیل کے مطابق ناخن کا سفید ہونا جگر کی خرابی جگر ختم ہونا دل کا دورہ، ذیابیطس تھائی رائیڈ کی بیماری اور غذائی قلت کے سبب ہوتا ہے۔ میز لائسز کے مطابق ناخنوں پر سفید لکیریں آرسینک کے زہر‘ دل کے دورے جزام، ملیریا، کیمو تھراپی اور کاربن مونو آکسائیڈ کے زہر کے باعث ہوتی ہیں۔
سرخ جامنی کالے ناخن:
یہ اس چوٹ کے سبب ہوتا ہے جس کے نتیجے میں خون کا لوتھڑا بن جائے یا نیل پلیٹ کے نیچے خون نکل آئے
سرخ ناخن :۔اس کا سبب مائنف سائنکلین جیسی منشیات ہو سکتی ہیں۔
کالے ناخن :
یہPseudomonas بیکٹریا کے انفیکشن اور نیل میلونوما کی وجہ سے ہوتے ہیں ناخن کی تہہ اور کیوٹیکل میں ہونے والی خرابیاں اسکا سبب بنتی ہیں۔
Cuticle and nail fold abnormalities
کیوٹیکل کیرائنن وہ حصہ ہوتا ہے جو پچھلی ناخن کی تہہ کو نیل پلیٹ سے ملاتا ہے اس حصے میں ہونے والی خرابیاں درج ذیل ہیں۔
Telangiectasia(خون کی شریانوں کا پھیلاؤ)
یہ ربطی بافت کی بیماریوں مثلاً
LupusErythematous اور گنٹھیا کے باعث ہو سکتا ہے۔
Vasculitis(خونی رگ کی سوزش) یہ بیماری ناخن کو بے حس اور بے جان کر دیتی ہے اور اس کے ٹشو مردہ ہو جاتے ہیں۔
Subungal hyperkeratosis
(ناخن کے نیچے جلد کا بڑھ جانا)
نیل پلیٹ کے نیچے دھبے پڑنا ور اس کا موٹا ہونا جس کا سبب ناخن کا پھپھوندی کا انفیکشن اور سورائسز ہوتا ہے۔
Pterygium:۔ چوٹ لگنے کے باعث ناخن کی سطح کے نیچے کسی بافت کا کٹ پھٹ جانا، سٹیون جانشن سینڈروم اورلیچن پلنس ایک ایسی مرض ہے جس میں ناخنوں کے گرد بھی سرخ پھنسیاں بننا شروع ہو جاتی ہے
Paronychia(بافتوں کی سوزش)
پیرینکائم کا انفیکشن جو بکٹیریا، وائرس اور پھپھوندی کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اور انگلی کے ناخنوں کے گرد زخم پڑ جانا۔
ناخن کی شکل کے نقائص:۔
ناخن کی شکل غیر معمولی ہو سکتی ہے جس کی کئی وجوہات درج ذیل ہیں۔
ناخنوں کا بدصورت ہونا:۔ ناخن کا بدشکل یا بدصورت ہونے کی وجہ نیل پلیٹ کے نیچے نرم بافت کا موٹا ہونا ہے جس کے نتیجے میں ناخن انگلی کے کنارے سے بڑے ہو جاتے ہیں او نیچے کی طرف مڑ جاتے ہیں جس کے نیچے میں ناخن چمچ کے الٹی طرف جیسا لگتا ہے یا ڈرم سٹک جیسی انگلیاں ناخنوں کی بدصورتی کا تعلق کچھ قسم کے کیسز سے بھی ہوتا ہے۔ (خاص طور پر پھیپھڑے کے امراض) جن میں برونکائنس، پھیپھڑوں کا پھوڑا، جسم میں کسی جگہ پس کا جمع ہونا پھیپھڑوں کی بافتوں کے امراض اسکے علاوہ وریدوں کی ساخت کا بگڑنا جگر کی خرابی آنتوں کی سوزش وغیرہ کے اثرات بھی ناخنون کی ساخت اور خوبصورتی پر اپنا گہرا اثر ڈالتے ہیں۔ ناخنوں کی بدصورتی مریضوں میں دل کے امراض کے باعث بھی ہوتی ہے۔ دل کی شریانیں تنگ ہونے سے بعض اوقات اس بدصورتی کا سبب پتہ نہیں چلتا اور اس کا تعلق بیماریوں سے نہیں جوڑا جاتا۔
(الف)Koilonychia (چمچ نما ناخن)
اس میں ناخن لمبائی اور چوڑائی کے رخ چمچ کی شکل کا ہو جاتا ہے۔ اس کا تعلق اکثر فولاد کی کمی ا ینمیا سے ہوتا ہے یہ اکثرچوٹ لگنے نیل پلیٹیلا سینڈروم اور hemochromatosisکی وجہ سے ‘ صدمے کی وجہ خون کے بہاؤ میں سے شدید کمی ہو جانے کے سبب بھی ناخن کی ایسی حالت ہو جاتی ہے۔
(ب) Onychocryptosis
(ناخن کا اندر کی طرف بڑھنا)
اس کا مطلب ہے کسی سوزش کے باعث ناخن کا نہ بڑھنا اور اس میں ناخن اندر کی طرف بڑھنا اور گوشت کے اندر گھسنا شروع ہو جاتے ہیں
(پ) Pincer shaped nailsچمٹی یانوکدار ناخن:۔
ان کا باعثpsoriasisخارش‘جلد پر چھلکے‘چنبل اور دانے بن جاتے ہیں اور شدید خارش ہو سکتی ہے
ناخنوں کی بڑھوتری
ناخن کے ارد گرد غیر معمولی اجسام بھی ہو سکتے ہیں۔ جیسے
Viral warts وائرل انفیکن کے سبب موہکے یا مسے بنا سکتے ہیں مگرSubungal melanoma:۔ گہرے سیاہ رنگ کی رسولی ہے جو سرطان کا سبب ہو سکتی ہے اور پنل بیڈ سے نمودار ہوتی ہے۔ اس کے برعکس Melanocytic nevus:۔ ناخن پرایسے رنگدار نشان کو کہتے ہیں جو سرطان کا سبب نہیں ہوتے۔
Keratoacanthoma۔ ایسی رسولی جو جلد کے غدودوں سے نمودار ہوتی ہے چھ ہفتوں میں دو سینٹی میٹر کے لگ بھگ ہوجاتی ہے۔
Squamous cell carcinoma۔
جلد کی سرطان زدہ حالت جوکیر ائن اور چر بیلے موادسے بنتا ہے
Corn:۔ ناخنوں کے گرد چنڈیا بننا ۔یہ موٹی اور سخت جلد کا درد زدہ حصہ ہے جو دباؤ کے باعث بن جاتا ہے۔
Inclusion cyst:۔ غیر معمولی جعلی نما تھیلی جس میں ہوا، مائع یا نیم ٹھوس مواد ہوتا ہے۔
Subungal fibroma۔یہ غیر سرطان زدہ رسولی ہوتی ہے جو نیل پلیٹ کے نیچے نمودار ہوتی ہے۔
Onychomatricoma۔ ناخن کی سطح کا نرم پڑ جانا بعض مریضوں میں ناخنوں کا نہ ہونا یا ناخنوں کا ڈھیلا ہو کر گر جانا بھی ایک مرض کی علامت ہے۔
Subungual exostosis
نیل پلیٹ کے نیچے ہڈی کا بڑھ جانا بالخصوص پاؤ ں کے انگوٹھا کے نیچے غیر سرطان زدہ ہڈی کا ابھار
Myxoid Cystانگلیوں کے ناخن میں ایک گرہ نما گلٹی کا بن جانا ایسی علامت ہے جس میں انتہائی لیس دار مواد موجود ہوتا ہے۔ انہیں Pyogenic granuloma۔ یعنی سوزش زدہ اُبھری ہوئی بافتیںیا رسولیاں بھی کہا جاتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں