295

ملک بجلی کی پیداوار میں خود کفالت حاصل کئے بغیر ترقی نہیں کر سکتا.ڈاکٹر محمد اختر ملک صوبائی وزیر توانائی

ساہیوال (خصوصی رپورٹ)صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر محمد اختر ملک نے کہا ہے کہ کوئی ملک بجلی کی پیداوار میں خود کفالت حاصل کئے بغیر ترقی نہیں کر سکتا اور موجودہ حکومت ملک سے بجلی کی کمی دور کرنے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لا رہی ہے. چین پاکستان کا آزمودہ دوست ہے جس نے اس اہم شعبے میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کر کے پاکستان کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے میں بڑی مدد دی ہے۔ انہوں نے یہ بات 1320میگا واٹ کے ساہیوال کول پاور پلانٹ کے دورے کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر پلانٹ کے چیف ایگزیکٹوآفیسر مسٹر سونگ تائی جی پاور ڈویلپمنٹ بورڈ کی مینجنگ ڈائریکٹر ثانیہ اویس اور ڈپٹی کمشنر ساہیوال محمد زمان وٹو بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت معیشت کومستحکم کرنے کی بھر پور کوشش کر رہی ہے تا کہ ملک کی ترقی کاسفر تیز ہو اور روز گار کے مواقع پیدا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ ساہیوال کول پاور پراجیکٹ سے نا صرف ملک کی توانائی کی ضروریات پوری ہوئی ہیں بلکہ اس سے علاقے کی سماجی و اقتصادی ترقی پر بھی دورس اثرات مرتب ہوئے ہیں۔ چینی کمپنی کی طرف سے بنائے گئے ٹیکنیکل سکول میں بیک وقت علاقے کے 300 نوجوانوں کو کمپیوٹر ،الیکٹریکل اورمکینیکل ٹیکنالوجیز میں تربیتی مواقع بھی فراہم ہوں گے جس سے نوجوان بہتر روز گار حاصل کر سکیں گے۔ صوبائی وزیر توانائی نے ساہیوال کول پاور پراجیکٹ کو ایک ماحول دوست منصوبہ قرار دیا اور ہدایت کی کہ پراجیکٹ سائٹ پر مزید درخت لگائے جائیں تا کہ گرین پنجاب کے خواب کو شرمند ہ تعبیر کیا جا سکے۔ اس سے پہلے پلانٹ کی چیف ایگزیکٹو آفیسرمسٹر سونگ تائی جی نے بتایا کہ منصوبے میں اب تک 30 ہزار درخت لگائے جا سکے ہیں اور 15 ہزار مزید درخت لگائے جائیں گے جس سے اس منصوبے کا شمار پاکستان کے سب سے گرین اور ماحول دوست منصوبوں میں ہو گا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ پلانٹ سائٹ پر 1200،1200میگا واٹ کے دو مزید آر این ایل جی پلانٹ لگانے کی گنجائش موجود ہے جس کے لئے فیزبیلیٹی تیار کر لی گئی ہے اور ان پر حکومت کی طرف سے اجازت ملنے کے بعدکام فورا شروع ہو سکتا ہے۔ بعد میں صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر محمد اختر ملک نے پلانٹ کا دورہ کیا اور بجلی پیدا کرنے کے تمام مراحل کا مشاہدہ کیا. انہیں بتایا گیا کہ اس وقت دونوں پلانٹوں پر 400افراد کام کر رہے ہیں جن میں سے نصف تعداد پاکستانی ہیں۔ صوبائی وزیر نے تعمیر کئے گئے ٹیکنیکل ٹریننگ سنٹر کا بھی دورہ کیا اور ہدایت کی کہ اسے فوری طور پر نوجوانوں کی ٹریننگ کے لئے استعمال میں لایا جائے تا کہ پلانٹ کے اردگرد کے درجنوں دیہاتوں کے نوجوان مختلف شعبوں میں فنی تعلیم حاصل کر کے اچھا روز گار حاصل کر سکیں۔ دورے کے اختتام پر انہو ں نے یاد گاری پودا لگا کر پلانٹ پر شجر کاری مہم کا بھی افتتاح کیا۔

You can only have direct referrals after 15 days of being a user and having at least 100 clicks credited

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں