228

مری،لوئر ٹوپہ تا کوہالہ روڈ کی عدم تعمیر کے خلاف 20 اکتوبر کو بھرپور احتجاج کیا جائے گا۔ محمد سفیان عباسی

اسلام آباد ( طارق شاد سے) لو ئر ٹو پہ کوہالہ روڈکی تعمیر الیکشن کمیٹی کے چیئر مین محمد سفیان عباسی نے اعلان کیا ہے کہ لو ئر ٹو پہ کوہالہ روڈ کی عدم تعمیر اور کروڑوں روپے خر د برد کر نے کے خلاف 20اکتو بر کو جھیکا گلی کے مقام پر اہلیان مر ی ، آزاد کشمیر اور ابیٹ آباد کے عوام کا ہفتہ دوپہر 2بجے لو ئر ٹو پہ کے مقام پر ایک عظیم الشان پُر امن احتجاجی مظاہرہ کر یں گے ، جس میں طلبہ ، ٹرانسپورٹرز، تاجر برادری ، علماء اکرام ، سماجی و سیاسی کار کنان ، سول سوسا ئٹی ،مزدور ،کسان سمیت تمام شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے افرد سیاسی وابستگیوں سے بالا تر ہو کر اس میں شر یک ہو ں گے۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے احتجاجی مظاہرے کے حوالے سے معززین علاقہ کی مشاورتی اجلاس سے خطاب کر تے ہو ئے کیا ۔اس موقع پرجماعت اسلامی کے رہنماء محمد تاج عباسی ، جنرل کو نسلر یو نین کو نسل دیول حمادلمحمود عباسی ، تحریک لبیک یارسول اللہ کے رہنماء قاری روح الامین ، فر حان عباسی ، اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔محمد سفیان عباسی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ لو ئر ٹو پہ کوہالہ روڈ کو اس کی اہمیت اور افادیت اور اس کے استعمال کو مد نظر رکھتے ہو ئے فوری طور پر 40فٹ چوڑی سڑک کی تعمیر شروع کی جا ئے ، محض چالیس ،پچاس کروڑ رو پے مختص کر کے اس کی تعمیر و تکمیل نا ممکن ہے یہ محض عوام کے پیسے کو ضائع کر نے کے مترادف ہو گا،انھوں نے کہاس سلسلے میں وزیر اعلیٰ پنجاب ،گو رنر پنجاب ، کورکمانڈر راولپنڈی ، GOCمری ،منتخب عوامی نمائندوں ، کمشنر راولپنڈی ، چیئرمین این ایچ اے کو آگاہی کے لیے اہل علاقہ کی جانب سے ایک خط بھی ارسال کر دیا گیا ہے ۔انھوں نے کہالو ئر ٹو پہ کوہالہ روڈ جو کہ مری کی چار یو نین کونسلوں ، ایبٹ آباد کی ایک (بیروٹ)اور آزاد کشمیر کے تین اضلا ع مظفر آباد ، باغ اور نیلم کی لاکھو ں کی آباد ی کا واحد ذریعہ آمد ورفت ہے اور دفاعی اعتبار سے نیلم ،لیپہ اور چکوٹھی سیکٹر کی پاک فوج کی لاجسٹک سپورٹ کا واحد ذریعہ بھی ہے ،لیکن سابقہ حکمرانوں کی غفلت کی وجہ سے گذشتہ تیس سال پہلے کار پٹ کی گئی ،اس سٹر ک کی مناسب مر مت نہ ہو نے کی وجہ سے اب یہ کھنڈرات کا نمونہ پیش کر رہی ہے، انھوں نے کہا یہ سٹرک سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی آبائی یو نین کونسل سے بھی گزرتی ہے، سابقہ دور حکو مت میں لو ئر ٹو پہ کوہالہ روڈ کی تعمیر کے اس پُر زور عوامی مطالبے پر اُس وقت کی حکومت نے اس کی تعمیر کا آغاز ایک من پسند تعمیراتی کمپنی (حبیب کنسٹرکشن) کے ذریعے شروع کیاجس نے سڑک کو اُکھاڑپچھاڑ کر کڑوروں روپے قومی خزانے سے وصول کیے مگر کام نامکمل چھوڑ کر چلے گئے ، اہل علاقہ کا مطالبہ ہے کہ متعلقہ کمپنی کے مالکان کے خلاف کاروائی کر کے رقم واپس وصول کی جا ئے یا کام مکمل کروا یا جا ئے ،ورنہ عوامی جذبات کی تر جمان اس تحریک کواس مسئلے کے حل تک مرحلہ وار آگے بڑھا یا جا ئے گا ،انھوں نے کہا کہ اس روڈ کی اس اکھاڑ پچھاڑاور گردو غبار کی وجہ سے علاقے کہ عوام شدید ذہنی اذیت اور مہلک بیماریوں کا شکار ہو چکے ہیں جس میں سب سے زیادہ متاثر طلبہ اور طالبات ہیں جو روزانہ سفر کر تے ہیں جبکہ ٹرانسپورٹرز ، تا جر اور مو ٹر سائیکل سوار اس مسلسل تکلیف دہ صورتحال کا شکار ہیں اور سڑک پر بکھرے سولنگ کے پتھروں ہو نے والے حا دثا ت میں کئی قیمتی جا نوں کا ضیا ع بھی ہو چکا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں