تعلقات عامہ اور بنکنگ شعبہ کی خدمات نظر انداز کیوں؟ …. (صابر بخاری) میری عقلاں وچ اےجھول وے باھو…. (شگفتہ یاسمین، چیچہ وطنی) پاکپتن: بابا فرید یونیورسٹی کاقیام ناگزیر ہے. سینئرصحافی طارق جمال، راہنما پنجاب یونین آف جرنلسٹس (دستور) پاکپتن: کرونا وائرس کے پھیلاو کی روک تھام کے لیے پنجاب کے سرکاری ونجی تعلیمی ادارےبند کردیئے گئے. کراچی: اورنگی ٹاون میں راشد ہومیوپیتھک کلینک کا افتتاح کردیا گا. YHDWA کے زیر انتظام فری میڈیکل کیمپ کا انعقاد بھی کیا گیا. حقائق تو یہ ہیں۔۔۔ (صابر بخاری) جال ۔۔۔۔(افسانہ)۔۔۔ شگفتہ یاسمین “مجرم” ۔۔۔ افسانچہ۔۔. (ہندی سے اردو ترجمہ: قیوم خالد، شکاگو) پاکپتن: بابا فرید یونیورسٹی کا قیام فی الفور عمل میں لایا جائے. طاہر فرید صحافی، کالم نگار یہ احسان نہیں ذمہ داری ہے (سیاسی افراتفری میں ایک راہنما تحریر) …. (پیرفیضان چشتی) عارف والا: حکومت نے نوازشریف کی ضمانت میں توسیع مسترد کرکے انتقام کی بدترین مثال قائم کی، رانا ارادت شریف ایم این اے پاکپتن میں یونیورسٹی کی ضرورت و اہمیت …. (پیر فیضان علی چشتی)

تعلقات عامہ اور بنکنگ شعبہ کی خدمات نظر انداز کیوں؟ …. (صابر بخاری)

تحریر: صابر بخاری 1) کرونا کیخلاف جنگ میں جہاں ڈاکٹر ،پیرامیڈیکس ،پاک فوج ،پولیس،میڈیا ہر اول دستے کا کردار ادا کر رہے ہیں وہیں ہم دو اہم شعبوں کو مسلسل نظر انداز کر رہے ہیں، جو فرنٹ لائن پر موجود مزید پڑھیں

%d bloggers like this: